امریکی جاسوس کس خفیہ بیماری کا شکار، کیا اس کے پیچھے روس ہے؟

February 2, 2021 7:24 pm by Web Desk


مارک پولیمروپولوس
،تصویر کا کیپشن

مارک پولیمروپولوس اپنی بیماری کو اپنے روس کے دورے کے تناظر میں دیکھتے ہیں

مارک پولیمروپولوس اپنے ہوٹل کے کمرے میں جب سو کر اٹھے تو ان کا سر گھوم رہا تھا اور کان بج رہے تھے۔ وہ یاد کرتے ہوئے کہتے ہیں: ‘مجھے لگا جیسے میں قے کر دوں گا۔ میں کھڑا بھی نہیں ہوسکتا تھا۔ اس سے پہلے مجھے کئی بار گولیاں لگیں لیکن یہ میری زندگی کا سب سے خوفناک تجربہ تھا۔’

پولیمروپولوس نے ’دہشت گردی‘ کے خلاف امریکہ کی جنگ لڑنے والی سی آئی اے ٹیم کے ایک اعلیٰ افسر کی حیثیت سے عراق، شام اور افغانستان میں کئی سال گزارے تھے۔ ان کے خیال میں ماسکو میں اس رات انھیں خفیہ ’مائیکروویو ہتھیار‘ سے نشانہ بنایا گیا تھا۔

سنہ 2016 کے امریکی صدارتی انتخابات میں روس کی مداخلت کے بعد سی آئی اے کی قیادت نے ‘تیار رہنے کی کال’ دی تھی اور پولیمروپولوس جیسے جنگ آزمودہ افسران کی خدمات پھر سے حاصل کی گئی تھیں۔



Source link


Previouse Post :«

Next Post : »

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *