محمد بن سلمان اور جو بائیڈن: کیا امریکہ اب سعودی عرب کو دی گئی ’کھلی چھوٹ‘ کا ازسر نو جائزہ لے گا؟

February 3, 2021 2:02 pm by Web Desk


  • فرینک گارڈنر
  • نمائندہ بی بی سی

Protest against Saudi Arabia's human rights record, Washington (Oct 2019)

،تصویر کا کیپشن

سماجی کارکن یہ مطالبہ کر رہے ہیں کہ سعودی عرب کا انسانی حقوق کی پامالیوں پر احتساب کرنا چائیے

امریکہ کے صدر جو بائیڈن کی ’کیمپین ٹیم‘ کے مطابق سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب کو کھلی چھوٹ دے رکھی تھی۔ انھوں نے ٹرمپ انتظامیہ پر یہ الزام بھی عائد کیا تھا کہ اس نے سعودی عرب کی طرف سے یمن میں ہونے والی طویل اور تباہ کن جنگ کے دوران ہونے والی انسانی حقوق کی پامالیوں پر آنکھیں بند کر رکھی تھیں، جہاں چھ سال کے عرصے میں ہزاروں افراد ہلاک کیے گئے۔

وائٹ ہاؤس میں صدر جو بائیڈن کی نئی ٹیم نے سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کا از سر نو جائزہ لے گی اور انسانی حقوق کے مسئلے کو باقاعدگی سے دیکھا جائے گا۔ صدر بائیڈن نے یہ اشارہ دیا ہے کہ وہ سعودی عرب کی یمن میں جاری مہم جوئی کے لیے امریکی فوجی امداد روک دیں گے۔

اقتدار میں آنے کے پہلے ہفتے میں ہی صدر جو بائیڈن کے تحت امریکی انتظامیہ نے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات سے کئی ارب ڈالرز کے اسلحے کے فروخت کے معاہدوں کو معطل کر دیا ہے اور ان کا نئے سرے سے جائزہ لینا شروع کر دیا ہے۔



Source link


Previouse Post :«

Next Post : »

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *